عالمی خبریں

title_image


Share on Facebook

لندن : بلجیم کے حکام کے مطابق ایرانی حکومت کا تختہ پلٹنے کے لیے کی جانے والی حزب اختلاف کے کارکنوں کی ایک ریلی میں بم دھماکہ کرنے کی سازش رچنے کے الزام میں ایک ایرانی سفارت کار کو دو ساتھیوں کے ساتھ گرفتار کر لیا گیا۔

ان کے علاوہ مزید تین افراد کو گرفتار کیا گیا تھا لیکن ان میں سے دو کو بعد میں رہا کر دیا گیا۔گرفتار کیا گیا سفارت کار ویانا میں آسٹریائی سفارت خانہ میں ملازمت کرتا ہے اور اسے جرمنی میں پکڑا گیا۔ وہ اس ایران نژاد شادی شدہ جوڑے سے رابطے میں تھاجسے 500گرام دھماکہ خیز کیمیکل ٹی اے ٹی پی اور دھماکہ کرنے کے آلے کے ساتھ بروسلز میں گرفتار کیا گیا تھا۔

38سالہ عامر اور33سالہ نسیمہ پر شبہ ہے کہ ان دونوں نے نیشنل کونسل آف ریزسٹینس آف ایران (این سی آر آئی) کے زیر اہتمام ہفتہ کو پیرس کے مضافاتی علاقہ ویلے پنٹی میں ہونے والی ایک ریلی میں بم دھماکہ کرنے کا منصوبہ بنا یاہواتھا۔

اس بم دھماکہ کی سازش میں فرانس میں تین دیگر افراد گرفتار کیے گئے تھے۔ جن میں 54سالہ مرہاد کو ہفتہ کی سہ پہر میں جلسہ گاہ کے قریب سے اور دیگر دو کو پیرس کے شمال میں سینلیس سے گرفتار کیا گیاتھا۔لیکن ان تینوں کو ناکافی شواہدکی بناءپر رہا کر دیا گیا۔