قومی خبریں

title_image


Share on Facebook

نئی دہلی: اروند کیجری وال نے لیفٹننٹ گورنر کو دہلی حکومت کے کام کاج میں رکاوٹ ڈالنے سے روکنے کے حوالے سے سپریم کورٹ کے فیصلہ کا خیرمقدم کرتے ہوئے اسے دہلی کے عوام اور جمہوریت کی ایک بڑی جیت سے تعبیر کیا۔

نائب وزیر اعلیٰم منیش سسودیہ نے بھی اس تایخی فیصلہ پر عدالت عظمیٰ سے اظہار تشکر کیا۔سسودیہ نے کہا کہ اب دہلی حکومت کو اپنی فائلیں لیفٹننٹ گورنر کو نہیں بھیجنا پڑیں گی اور اب کوئی کام نہیں رکے گا۔ کیجری وال کے تبصرے پر دہلی کی سابق وزیر اعلیٰ شیلا دکشت نے کیجریوال کو مشورہ دیا کہ وہ مرکز کے ساتھ تال میل کرکے عوامی مفاد کے کاموں پر زیادہ توجہ دیں۔

دکشت نے کہا کہ عام آدمی پارٹی کی شاندار کامیابی اسی وقت سمجھی جاتی جب اراضی اور امن و قانون کا بھی اختیار اسے مل جاتا۔عدالت نے ایسا کوئی اختیار نہیں دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹکراو سے کچھ حاصل نہیں کیا جاسکتا۔ باہمی تعاون اور تال میل سے ہی کام ہو سکتے ہیں۔اور عوام کی مشکلات و پریشانیوں کو مدنظر رکھتے ہوئے ٹکراو ¿ سے بچنے کی سخت ضرورت ہے۔