عالمی خبریں

title_image


Share on Facebook

فلپائن کے شورش زدہ جزیرہ بیسلن میں ایک فوجی چوکی پر منگل کی صبح ایک وین کے اندر ہونے والے زبردست دھماکے میں کم از کم 10 افراد ہلاک ہو گئے۔علاقے کے اسکاؤٹ رینجر یونٹ کے کمانڈر لیفٹیننٹ کرنل مون المودووار نے بتایا کہ فوجی چوکی پر سیکورٹی فورسز نے وین روک کر اس کے ڈرائیور سے بات چیت کی تھی اور اس کے کچھ ہی لمحے بعد اس میں دھماکہ ہوا. اب تک یہ پتہ نہیں چل سکا ہے کہ حملے میں کسے نشانہ بنایا گیا تھا لیکن یہ طے ہے کہ دھماکے مقررہ وقت سے پہلے ہو گیا۔

دہشت گرد تنظیم ابو سياف کے گڑھ بیسلن میں ہو نے والے اس دھماکے میں ایک فوجی، پانچ جنگجو اور ایک خاتون اور اس کا بچہ مارا گیا۔ کئی دیگر زخمی بھی ہوئے ہیں لیکن ان کی تعداد کی اب تک تصدیق نہیں کی جا سکی ہے۔

بیسلن کے گورنر جم سلمان نے بتایا کہ ان کو رپورٹ ملی ہے کہ اس دھماکے کے پیچھے ابو سیاف کا ہاتھ ہے لیکن انہوں نے اس سلسلے میں تفصیلات نہیں بتائیں ۔

قابل غور ہے کہ فلپائن اور مغربی ممالک کے شہری ابو سیاف کے کنٹرول کی وجہ بیسلن سے دور ہی رہتے ہیں. یہاں دہشت گرد تنظیم اور سیکورٹی فورسز کے درمیان اکثر و بیشترشدید جھڑپیں بھی ہوتی رہتی ہیں۔